بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

10 ذو القعدة 1445ھ 19 مئی 2024 ء

دارالافتاء

 

عورت کے لیے عورت کے مجمع میں نعت پڑھنا


سوال

کسی نعت خواں عورت کے لیے صرف عورتوں کے مجمع میں نعت پڑھنے کا کیا حکم ہے؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں عورت کا عورتوں کے مجمع میں (جس میں کوئی نامحرم مرد نہ ہو، اور نامحرم مرد تک عورت کی آواز نہ جائے)  حمد و نعت،  حکمت و دانائی پر مشتمل اور صحیح معنی و مفہوم والے اشعار  پڑھنا جائز ہے۔ فقط واللہ اعلم

مزید تفصیل کے لیے درج ذیل لنکس پر فتاویٰ ملاحظہ کیجیے:

نعت خواں عورت کا اپنی آواز میں نعت پڑھ کر ویب سائٹ پر اَپ لوڈ کرنا

مردوں اور عورتوں کے لیے عورت کی آواز میں نعتیں سننا


فتوی نمبر : 144205200983

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں