بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 صفر 1443ھ 17 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

افطار کے وقت مسنون دعا پڑھنا بھول جائے


سوال

افطار کے وقت اگر مسنون دعا پڑھنا بھول جاۓ تو کیا حکم‌ ہے ؟

جواب

احادیث میں افطار کے لیے کئی دعائیں منقول ہیں، کچھ  دعائیں افطار سے قبل مانگنے کی ہیں کچھ افطار سے بعد کی ہیں،ان دعاؤں  کا اہتمام کرنا چاہیے ،اگر کوئی شخص کسی دن بھول جائے تو اس پر کوئی گناہ نہیں ہے اور نہ  ہی اس سے روزہ میں کوئی فساد  یا نقص واقع ہوگا ۔ فقط واللہ اعلم 

افطار کی مسنون دعاؤں کے لیے درج ذیل لنک دیکھیے:

روزہ کی نیت اور افطار کی مسنون دعا دل میں یا زبان سے پڑھنے کا حکم

افطار کی دعا کا محل کیا ہے؟


فتوی نمبر : 144209200547

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں