بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

8 شوال 1445ھ 17 اپریل 2024 ء

دارالافتاء

 

شیشہ / حقہ اور تمباکو بیچنا


سوال

شیشہ، حقہ  اور کھلا تمباکو  بیچنا جائز ہے یا نا جائز؟

جواب

حقہ یا شیشہ   کا استعمال منہ  میں بدبو پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ مضر صحت بھی ہے،  اس لیے استعمال پسندیدہ نہیں ہے اور اس کا کاروبار پسندیدہ نہیں ہے،  البتہ اس کی آمدنی حرام نہیں ہے ، اس کا استعمال  جائز ہے۔ اسی طرح تمباکو  کی خرید فروخت بھی جائز ہے۔

حقہ یا شیشہ کے مضر صحت ہونے کی وجہ سے حکومت نے اگر اس کاروبار پر پابندی لگائی ہو تو  حکومتی قانون کی پاس داری کی جائے۔

حقہ / شیشہ سے متعلق تفصیل کے لیے درج ذیل لنک پر جامعہ کا فتویٰ ملاحظہ فرمائیں :

شیشہ اور حقہ پینے کا حکم

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144207201531

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں