بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

20 ذو الحجة 1442ھ 31 جولائی 2021 ء

دارالافتاء

 

مونچھوں کو دونوں سائیڈوں سے بَل دینا


سوال

مونچھوں کو دونوں سائیڈوں سے بل دینا کیا ٹھیک ہے؟  قرآن و حدیث کی روشنی میں اس کے بارے میں کیا حکم ہے؟

جواب

حضور اکرم صلی اللہ علیہ و سلم کی سنت اور حکم تو یہ ہے کہ مونچھوں کو کتر کر بالکل باریک  رکھا جائے، یعنی اچھی طرح کاٹا جائے کہ وہ ہونٹوں کے برابر ہوجائیں، اس سنت پر عمل کے ساتھ ایک مسلمان کے لیے مونچھوں کو بَل یا تاؤ دینے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔

مزید تفصیل کے لیے درج ذیل فتویٰ ملاحظہ فرما لیا جائے:

مونچھوں کے متعلق شرعی احکام

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144110200357

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں