بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

5 رجب 1444ھ 28 جنوری 2023 ء

دارالافتاء

 

میزان بینک انویسمنٹ اکاؤںٹ کھلوانا


سوال

میں میزان بینک میں میزان انویسمنٹ اکاؤنٹ  کھلوانا چاہتا ہوں، بقول بینک کے میں نفع نقصان کا برابر کا شراکت دار ہوں گا۔ کیا یہ جائز ہے؟

جواب

مروجہ اسلامی بینکوں کے معاملات مکمل طور  پر شرعی اصولوں کے مطابق نہیں ہیں؛ اس لیےکسی بھی مروجہ اسلامی بینک میں انویسمنٹ کرنا شرعاً جائز نہیں ہے۔

تفصیل کے لیےمندرجہ ذیل لنک ملاحظہ فرمائیں۔ 

مروجہ اسلامی بینکاری اوربنوری ٹاؤن کامؤقف

مروجہ اسلامی بینکوں میں سیونگ اکاؤنٹ کھولنے کے جائز نہ ہونے کی علت

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144212202060

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں