بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 ذو الحجة 1441ھ- 08 اگست 2020 ء

دارالافتاء

 

بیوی کا شوہر کو زکاۃ دینا/ لے پالک کا جائیداد میں حصہ


سوال

1.بیوی کا شوہر کو زکاۃ دینا کیسا ہے؟

2. لے پالک بچے/بچی کا مرحوم/مرحومہ والدین کی جائے داد میں حصہ ہے یا نہیں؟لے پالک لینے کے بعد اولاد ہوجائے تو کیا حکم ہے؟ اور نہ ہو تو کیا حکم ہے؟

جواب

1 : بیوی شوہر کو  زکاۃ نہیں دے سکتی۔

2 : لے پالک اولاد کا اسے پالنے والے کی جائیداد میں حصہ نہیں ہوتا چاہے پالنے والے کی دوسری اولاد ہو یا نہ ہو۔ تفصیل یہاں ملاحظہ کریں

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144108200567

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں