بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

14 ذو القعدة 1445ھ 23 مئی 2024 ء

دارالافتاء

 

حالفظہ کی کمزوری کا حل


سوال

 میرا حافظہ دن بہ دن کمزور ہورہا ہے، براۓ مہربانی کوئی حل بتادیجئے۔

جواب

حافظہ کی تیزی میں زیادہ کردار اوراد و وظائف کے بجائے گناہوں سے اجتناب اور یک سوئی کا ہوتا ہے،گناہوں سے حافظہ کم زور ہوتا ہےاسی طرح حافظہ اور ذہانت پر کم نیند اور بے خوابی بھی زہر کا اثر کرتی ہے، اس سے ذہنی الجھن پیدا ہوتی ہے، لہٰذا  گناہ  چھوڑ دیں، اور جن عبادات میں کوتاہی ہورہی ہے ہمت کرکے ان کو پابندی کے ساتھ کریں، نیز نیند پوری کرنے کے اہتمام کے ساتھ دوپہر کے اوقات میں قیلولہ کی عادت ڈالیں، اس سے ذہن بیدار رہنے کے ساتھ حافظہ بھی اچھا ہوتاہے۔ 

حافظہ قوی کرنے کے لیے ایک عمل حدیث شریف میں مروی ہے،  حضرت مولانا زکریا صاحب رحمہ اللہ نے اسے اپنے رسالےفضائلِ قرآن کے آخر میں بھی  ذکر کیا ہے۔ اس کی تفصیل کے لیے درج ذیل لنک پر فتویٰ ملاحظہ کیجیے:

حافظہ تیز کرنےوالے اعمال

اگر حافظ نہ ہونے کی بنا پر اس عمل کا کرنا مشکل ہو تو ہر نماز کے بعد گیارہ بار "رَبِّ اشْرَحْ لِيْ صَدْرِيْ وَیَسِّرْ لِيْ أَمْرِيْ وَاحْلُلْ عُقْدَةً مِّنْ لِّسَانِيْ یَفْقَهُوْا قَوْلِيْ" پڑھیں۔

ہر فرض نماز کے بعد دایاں ہاتھ پیشانی پر رکھ کر گیارہ مرتبہ "یَاقَوِيُّ" پڑھیں۔

اس کے علاوہ ہمارے اکابر سےذہانت کی تقویت کے اسباب سے متعلق یہ بھی منقول ہے کہ نہار منہ کشمش اور بادام کااستعمال حافظہ کے لیے مفید ہے، مسواک کا پنج گانہ نماز سے پہلے وضو میں استعمال اور کثرتِ تلاوتِ قرآن مجید  و استغفار سے باطن روشن ہوتا ہے، جو قوتِ حافظہ کا باعث ہے۔حصولِ علم میں مسلسل محنت ، بلاعذر ناغہ نہ کرنا قوتِ حافظہ کے لیے اچھے اعمال ہیں۔

مزید تفصیل کے لیے درج ذیل لنک ملاحظہ فرمائیں:

حافظہ اور ذہانت کی تیزی کے لیے وظیفہ

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144505101635

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں