بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

12 شعبان 1445ھ 23 فروری 2024 ء

دارالافتاء

 

مشت سے کم داڑھی رکھنے والے کی اذان، اقامت اور امامت مکروہ ہے


سوال

داڑھی کاٹنے والا اذان، اقامت یا امامت کرا سکتا ہے؟

جواب

داڑھی کاٹ کر ایک مشت سے کم کرنے والے کی اذان، اقامت اور امامت مکروہ ہے۔

تفصیل کے لیے ملاحظہ کریں :

داڑھی کٹوانے والی کی اذان واقامت

داڑھی کاٹنے والے شخص کی امامت

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144203200396

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں