بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

29 ربیع الثانی 1443ھ 05 دسمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

بی فور یو میں پیسہ لگانا


سوال

کیا  بی فار یو کمپنی کے ساتھ کاروبار جائز ہے  جو کہ منافع پرسنٹیج کے حساب سے دیتی ہے جو کہ فکس نہیں  ہے اور سارے کاروبار ظاہر ہیں؟ البتہ ممبر سے لی گئی رقم چھ ماہ بعد پوری واپس کرتی ہے اگر ممبر نکالنا چاہے۔ ان کے ساتھ رقم لگانا جائز ہے؟

جواب

مذکورہ ادارے میں انویسٹ کرنے میں کئی شرعی قباحتیں پائی جاتی ہے، لہذا اس میں انویسٹمنٹ کرکے نفع حاصل کرنا جائز نہیں، اس  سے اجتناب کیا جائے۔فقط واللہ اعلم

مزید تفصیل کے لیے درج ذیل لنک ملاحظہ کیجیے:

B4u میں انویسٹمنٹ کرنا


فتوی نمبر : 144203200891

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں