بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

21 ذو الحجة 1441ھ- 12 اگست 2020 ء

دارالافتاء

 

سڑک کی تعمیر میں زکاۃ استعمال کرنے کا حکم


سوال

سڑک کی تعمیر میں زکاۃ خرچ کرنے کا کیا حکم ہے؟

جواب

سڑک کی تعمیر میں زکاۃ کی رقم خرچ کرنا جائز نہیں، ایسا کرنے سے زکاۃ ادا نہیں ہوگی، زکاۃ کی ادائیگی صحیح ہونے کے لیے ضروری ہے کہ کسی مستحقِ زکاۃ شخص کو مالک بناکر دی جائے۔

الفتاوى الهندية (5 / 134):
"وَلَايَجُوزُ أَنْ يُبْنی بِالزَّكَاةِ الْمَسْجِدُ، وَكَذَا الْقَنَاطِرُ وَالسِّقَايَاتُ، وَإِصْلَاحُ الطَّرَقَاتِ، وَكَرْيُ الْأَنْهَارِ وَالْحَجُّ وَالْجِهَادُ وَكُلُّ مَا لَا تَمْلِيكَ فِيهِ". فقط والله أعلم

مستحقِ زکاۃ کی وضاحت جاننے کے لیے درج ذیل لنک پر فتویٰ ملاحظہ کیجیے:

زکاۃ کا مستحق کون ہے؟ مستحق کی تحقیق کرنا

زکاۃ کا اولین مستحق


فتوی نمبر : 144108201172

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں