بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

4 شوال 1445ھ 13 اپریل 2024 ء

دارالافتاء

 

زامیہ نام رکھنے کا حکم


سوال

زامیہ نام رکھنا کیسا ہے،  کیا یہ نام رکھنا درست ہے؟

جواب

" زَامِیَہ" نام یا اس  مادّے سے استعمال ہونے والے الفاظ تتبع اور تلاش کے بعد کسی مستند لغت میں نہیں مل سکے، لہذا مذکورہ نام مجہول المعنی ہونے کی وجہ سے نہ رکھا جائے،مذکورہ نام رکھنے  کے بجائے بچی کا نام صحابیات رضی اللہ عنہن، یا نیک عورتوں کے ناموں پر  رکھنا چاہیے۔

ہماری ویب سائٹ اور ایپلی کیشن میں "اسلامی ناموں" کےعنوان سے ایک آپشن موجود ہے،  جس میں سے آپ نام کا انتخاب کرسکتے ہیں۔

  آپ کی  سہولت کے  لیے  چند  صحابیات رضی اللہ عنہن کے اسماء گرامی درج ذیل ہیں: 

اُمامه، اَرویٰ، آمِنَه، بُریَده، بَریرَه، تَیما . ثُوَبِیه . جُمانه. جُوَیریه . حَمامه . حَرمَله . حَمنَه . حواء . حسّانه . خالده . خَنساء . خَولَه . دُرّه . ذُرّه . رُبَـیِّع (ربیع). رَمله . رُفَیده. رُقُیقه. رُمَیثه . رُمَیصاء . رَوضه . رابطه . زِِنّیره . زُنَیره. سائِبه . ساره .  سِدره . سَدوس . سُدَیسه . سُعاد . سلامه . سُمَیره . سُمَیکه . سَفّانه . شَیماء . شُمَیله . عاتِکه. عَمره . عَفراء .  عُماره . عَمّاره . غَزوه . فَارعه . فُرَیعَه . قَیله . لُبابه . ماریه . ماویه . نائله . نَفیسه . هند . یُسَیرَه. 

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144209201733

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں