بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 ذو القعدة 1445ھ 22 مئی 2024 ء

دارالافتاء

 

زخمی بکرےکازخم بھرجانےکےبعد اس کی قربانی کاحکم


سوال

 ایک بکرے کےپیٹ کا کچھ حصہ جل گیا،زخم اب بھر رہا ہے تو اس بکرے کی قربانی دی جاسکتی ہے؟

جواب

صورت مسئولہ میں مذکورہ بکرےکازخم بھرجانےکےبعداگر زخم یاجلنے کا نشان اتنا زیادہ نہ رہے کہ دیکھنے میں خراب معلوم ہواوراس کاجمال ختم ہو جائے تو اس صورت میں یہ ایسا عیب شمار نہ ہوگا جو قربانی کے لیے مانع ہو، اور  اس بکرےکی قربانی جائز  ہوگی۔

فتاوی ہندیہ میں ہے:

"(وأما صفته) : فهو ‌أن ‌يكون ‌سليما من العيوب الفاحشة، كذا في البدائع."

(كتاب الأضحية، الباب الخامس، 297/5، ط: رشيدية)

وفیہ أیضاً:

"ومن المشايخ من يذكر هذا الفصل أصلاً، ويقول: ‌كل ‌عيب يزيل المنفعة على الكمال، أو الجمال على الكمال يمنع الأضحية، وما لا يكون بهذه الصفة لا يمنع."

(كتاب الأضحية، الباب الخامس، 299/5، ط: رشيدية)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144407101112

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں