بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 ذو الحجة 1441ھ- 04 اگست 2020 ء

دارالافتاء

 

وضو میں منہ دھونے سے کیا مراد ہے؟


سوال

وضو میں منہ دھونے سے کیا مراد ہے؟ کیا اس میں کلی کرنا اور ناک میں پانی ڈالنا بھی شامل ہے؟

جواب

وضو کے فرائض میں جب منہ دھونے کا ذکر ہو تو اس سے مراد منہ کا وہ حصہ ہوتا ہے جو پیشانی کے بالوں سے تھوڑی تک اور ایک کان کی لو سے دوسرے کان کی لو تک ہوتا ہے، اس میں ناک میں پانی ڈالنا اور کلی کرنا شامل نہیں۔  تاہم کلی کرنا اور ناک میں پانی ڈالنا وضو کی سنتوں میں شامل ہے؛  لہذا اس کا اہتمام کرنا چاہیے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144108201108

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں