بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 صفر 1443ھ 17 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

وضو کے دوران سر پر ہاتھ پھیرنا


سوال

کیا وضو کرتے وقت سر پر ہاتھ پھیر سکتے ہیں؟

جواب

وضو کے فرائض میں سے سر کا مسح کرنا بھی ہے،  جس کے بغیر  وضو مکمل نہیں ہوتا، لہذا صورتِ مسئولہ میں  دونوں ہاتھ کہنیوں سمیت  دھونے  کے بعد   ہاتھ  تر کر کے سر کا مسح کیا جائے گا، البتہ ایک بار مسح کرنے کے بعد بار بار ہاتھ پھیرنا مکروہ ہے، اس کے علاوہ وضو کے دوران بالوں کو درست کرنے کے لیے سر پر ہاتھ پھیرنا خلافِ ادب  ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144209202368

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں