بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 ذو الحجة 1445ھ 16 جون 2024 ء

دارالافتاء

 

وضو کے بعد ناخن کاٹنے کا حکم


سوال

وضوکے بعد ناخن کاٹنا کیسا ہے، اس سے وضو ٹوٹتا ہے یا نہیں؟

جواب

وضو کے بعد ناخن کاٹنا درست ہے اس سے وضو نہیں ٹوٹتا۔

در مختار میں ہے :

"(ولا يعاد الوضوء) بل ولا بل المحل (بحلق رأسه ولحيته كما لا يعاد) الغسل للمحل ولا الوضوء (بحلق شاربه وحاجبه وقلم ظفره)."

(کتاب الطہارۃ،ارکان الوضوء،ج:۱،ص:۱۰۱،دارالفکر)

فتاوی ہندیہ میں ہے :

"وإن أمر الماء على شعر الذقن ثم حلقه لا يجب عليه غسل الذقن وكذا لو حلق الحاجب والشارب أو مسح رأسه ثم حلق أو قلم أظافيره لا تلزمه الإعادة كذا في فتاوى قاضي خان."

(کتاب الطہارۃ،الباب الاول فی الوضوء،ج:۱،ص:۴،دارالفکر)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144401100871

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں