بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 21 ستمبر 2020 ء

دارالافتاء

 

ٹی وی کی خرید و فروخت اور اس کی ریپیئرنگ کا حکم۔


سوال

میرےخالوکی صدرمیں ٹی وی کی دکان ہےوہ ٹی وی صحیح کرکے بھی بیچتےہیں اورنئےٹی وی بھی بیچتے ہیں، کیا یہ کام حلال ہے؟

جواب

ٹی وی چونکہ گناہ کا آلہ ہے اس لیے اس کی خریدوفروخت یا ریپیئرنگ وغیرہ کا کام اوراس کی آمدن حلال نہیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143101200174

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں