بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 ذو القعدة 1445ھ 26 مئی 2024 ء

دارالافتاء

 

تین دنوں تک تعزیت کے لیے بیٹھے رہنے کا حکم


سوال

فوتگی میں تین دنوں تک بیٹھنے کی شرعی حیثیت کیا ہے؟

جواب

کسی شخص کے انتقال پر اس کے لواحقین کا تعزیت کے لیے تین دنوں تک بیٹھے رہنا جائز ہے، تاہم اس کو لازم وضروری نہ سمجھا جائے۔

فتاویٰ ہندیہ میں ہے:

"ولا بأس لأهل المصيبة أن يجلسوا في البيت أو في مسجد ثلاثة أيام والناس يأتونهم ويعزونهم."

(كتاب الصلاة، الباب الحادي والعشرون في الجنائز، الفصل السادس، مسائل في التعزية، ج:1، ص:167، ط:بولاق مصر)

فقط والله اعلم


فتوی نمبر : 144405100960

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں