بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

30 ذو القعدة 1443ھ 30 جون 2022 ء

دارالافتاء

 

تعزیت کا مکروہ وقت نہیں ہے


سوال

کیا تعزیت کے لئے کوئی مکروہ اوقات ہیں؟

جواب

صورت مسئولہ میں تعزیت کے لیے کوئی مکروہ وقت نہیں ہے تاہم تعزیت کا مقصد چونکہ اہلِ میت کو صبر دلانا اور ان کا غم ہلکا کرنا ہوتا ہے، لہذا ایسے وقت پر تعزیت کی جائے جس میں ان کے لیے پریشانی نہ ہو۔

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (2 / 239):

(قوله: وبتعزية أهله) أي تصبيرهم والدعاء لهم به۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144206201609

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں