بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 19 جنوری 2021 ء

دارالافتاء

 

تصویر پر مشتمل شرٹ میں نماز پڑھنا


سوال

کیا ایسے کپڑوں میں نماز ہوجائے گی جن پر جانداروں کے موڈل بنے ہوئے ہوں۔ جیسے پیوما puma نامی کمپنی اپنے پروڈکٹ پر بلی کا موڈل لگاتی ہے؟

جواب

اگر شرٹ یا کپڑے پر کسی  کمپنی کے لوگو میں کسی جاندار کی تصویر ہو تو ایسے کپڑے میں نماز پڑھنا مکروہ ہے، البتہ  اگر وہ تصویر مٹادی جائے یا چھپالی جائے یا اس کا چہرہ مکمل کاٹ دیا جائے یا  تصویر بہت چھوٹی ہو کہ سمجھ نہ آتی ہو  یا اس پر سیاہی مل دی جائے تو  پھر نماز میں کراہت نہیں ہوگی۔ 

واضح رہے کہ جاندار کی تصویر بنانا یا بنوانا یا اسے اپنے پاس رکھنا اور دیکھنا سب ناجائز اور گناہ ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144201200052

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں