بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

4 شوال 1445ھ 13 اپریل 2024 ء

دارالافتاء

 

بیوی کو کسی کام سے روکنا اور اس کا بات مان لینا، لیکن آنسو بہانا


سوال

بیوی کو سمجھایاجائے کہ یہ کام نہ کرو اوربیوی کہنا مان جائے مگراس پر آنسوبہائے  تو کیا شوہرکواس پر  گناہ ملے گا؟

جواب

اگر بیوی کو جائز اور حق بات سمجھائی ہے اور بیوی اس کی وجہ سے روپڑے تو شوہر گناہ گار نہیں ہے اور اگر شوہر نے ناحق بیوی کا دل دکھایا ہو اور اس وجہ سے بیوی رو پڑی ہو تو شوہر گناہ گار ہے۔


فتوی نمبر : 144410101084

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں