بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

6 محرم 1446ھ 13 جولائی 2024 ء

دارالافتاء

 

شوگر کی وجہ سے روزہ چھوڑنا


سوال

 احتیاط کے باوجود شوگر کنٹرول نہیں ہے. کیا روزہ چھوڑ سکتا ہوں جب تک طبیعت میں بہتری آجائے. شوگر کی وجہ سے سر میں سخت درد ہوتا ہے اور سر چکراتا ہے قرآن پاک نہیں پڑھا جاتا۔

جواب

صورتِ مسئولہ میں اگر آپ کے لیے شوگر کی وجہ سے روزہ رکھنا مشکل ہے اور روزہ رکھنے سے شدید سر درد ہوتا ہے تو آپ روزہ چھوڑ سکتے ہیں، جب صحت میں بہتری آجائے اور روزہ رکھنے کے قابل ہو جائیں تو جتنے روزہ چھوڑے ہوں ان کی قضا کر لیں۔

فتاویٰ ہندیہ میں ہے:

"(ومنها المرض) المريض إذا خاف على نفسه التلف أو ذهاب عضو يفطر بالإجماع، وإن خاف زيادة العلة وامتدادها فكذلك عندنا، وعليه القضاء إذا أفطر كذا في المحيط. ثم معرفة ذلك باجتهاد المريض والاجتهاد غير مجرد الوهم بل هو غلبة ظن عن أمارة أو تجربة أو بإخبار طبيب مسلم غير ظاهر الفسق كذا في فتح القدير."

(كتاب الصوم، الباب الخامس في الأعذار التي تبيح الإفطار، 1/ 207، ط: رشيدية)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144509101022

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں