بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 رجب 1444ھ 03 فروری 2023 ء

دارالافتاء

 

سوکر اٹھنے کے بعد آنکھوں میں موجود میل پاک ہوتی ہے


سوال

صبح اٹھنے کے بعد جو آنکھوں میں میل سی (گڈ) ہوئی ہوتی ہے کیا وہ پاک ہے؟ اور کیا اس کا وضو میں دھونا ضروری ہے ؟ برائے مہربانی راہنمائی کر دیں۔

جواب

عموماًجو آنکھوں میں میل سی (گڈ)ہوتی ہے ،آنسو سے بنتی ہے،وہ پاک ہوتی ہے،البتہاگر  وضو کرتے وقت آنکھوں کے کنارے پر جمی ہوئی یہ میل آنکھوں کو نرمی سے بند کرنے پر  آنکھوں سے باہر نظر آئےتو اس کوصاف کرنا واجب ہے ،تا کہ پانی اس جگہ پہنچ جائے صرف اوپر سے  پانی بہانا کافی نہیں،اوراگر وہ میل جو  نرمی سے آنکھ بند کرنے پر آنکھ کے باہر  نظر نہ آئےتواس کو صاف کرنا ضروری نہیں،البتہ اگر آنکھ میں کوئی پھنسی وغیرہ ہو اور اس سے پانی نکلتا ہو تو اس سے وضو ٹوٹ جاتا ہے، اس لئے کہ یہ ناپاک ہے۔

فتاویٰ شامی میں ہے:

"وفي البحر لو رمدت عينه فرمصت يجب ‌إيصال ‌الماء تحت ‌الرمص إن بقي خارجا بتغميض العين وإلا فلا ".

( رد المحتار ،كتاب الطهارة ،اركان الوضؤ،1/97 ط:سعيد)

الفتاویٰ الهندیة میں ہے:

"ولو رمدت عینه فرمصت یجب ایصال الماء تحت الرمص ان بقی خارجاً بتغمیض العین والا فلا کذا فی الزاهدی".

(الفتاویٰ الهندیة،كتاب الطهارة ،(1/4) ط:دارالفكر  )

فقط واللہ اعلم 


فتوی نمبر : 144403101467

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں