بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 ربیع الاول 1443ھ 24 اکتوبر 2021 ء

دارالافتاء

 

صرف تین تولہ سونا ہو تو زکوۃ واجب ہوگی؟


سوال

جس شخص کے پاس تین تولہ سونا یا اس کے زیورات ہوں، کیا اس شخص پر اس کی زکوۃ واجب ہے؟ اس میں اعتبار قیمت کا ہوگا یا صرف سونے کا؟

جواب

اگر مذکورہ شخص کی ملکیت میں صرف اور صرف تین تولہ سونا ہی ہو، اس کے علاوہ چاندی یا نقدی یا مال تجارت میں سے کچھ بھی نہ ہو، تو سونا کا نصاب مکمل نہ ہونے کی وجہ سے اس پر زکوۃ واجب نہیں ہوگی۔زکوٰۃ کے اموال میں سے کوئی ایک پاس ہو یعنی صرف سونا یا صرف چاندی ملکیت میں ہوتو پھر مقدار کا اعتبار ہوتا ہے،قیمت کا نہیں۔ فقط واللہ أعلم بالصواب ۔


فتوی نمبر : 143508200003

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں