بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

24 شوال 1443ھ 26 مئی 2022 ء

دارالافتاء

 

شیعہ کو زکوٰۃ دینا


سوال

مجھ سے کسی بندے نے ایک انتہائی غریب بیوہ عورت کو زکوۃ  دینے کا سوال کیا تفصیل معلوم کرنے کے بعد پتہ چلا کہ عورت شیعہ ہے شیعہ کو زکوٰۃ  دینا جائز ہے یا نہیں؟

جواب

صورتِ  مسئولہ میں جن اہلِ تشیع کا عقیدہ کفریہ ہو  (مثلاً: قرآنِ کریم میں تحریف یا حضرت علی رضی اللہ عنہ کی الوہیت یا  جبریلِ امین سے وحی پہنچانے میں غلطی کا قائل ہو  یا اماموں کو  انبیاءِ کرام کی طرح معصوم اور ان کا من جانب اللہ مقرر ہونا مانتا ہو، یا حضرت ابو بکر صدیق رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی صحابیت کا انکار کرتا   یا حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا پر بہتان باندھتاہو وغیرہ ) تو ان  کو  زکاۃ دینا جائز نہیں ہے۔

 اگر ان کا عقیدہ کفریہ نہ ہو تو ان کو زکوٰۃ دینا جائز ہے،   تاہم کسی  شیعہ  کے عقائد معلوم نہ ہوں تو   اس کو  زکوٰۃ نہیں دینی چاہیے، زکوٰۃ کے باب میں احتیاط کرنا چاہیے؛ تاکہ زکوٰۃ صحیح طرح ادا ہوسکے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144110201537

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں