بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 21 ستمبر 2020 ء

دارالافتاء

 

شرم گاہ سے شہوت کے وقت نکلتے رہنے والے پانی کا حکم


سوال

عورت کی شرم گاہ سے جو پانی نکلتا رہتا ہے اس کا کیا حکم ہے؟

جواب

میاں بیوی (مرد و عورت) کی شرم گاہ سے شہوت کے وقت جو پانی نکلتا ہے وہ مذی کہلاتی ہے، مذی کا حکم یہ ہے کہ مذی پیشاب کی طرح ناپاک ہوتی ہے اور مذی کے نکلنے سے وضو ٹوٹ جاتا ہے، البتہ غسل واجب نہیں ہوتا ہے۔ جسم یا کپڑوں میں جس جگہ لگے، نماز سے پہلے اسے پاک کرنا ضروری ہوگا۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144108200250

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں