بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 صفر 1443ھ 19 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

عطاء اللہ شاہ بخاری رحمہ اللہ کی طرف منسوب خطبہ درحقیقت ان کا نہیں ہے


سوال

 آج کل سوشل میڈیا پر ایک خطبہ مشہور ہے جس کی نسبت سید عطاء اللہ شاہ بخاری رحمۃ اللہ علیہ کی طرف کی جاتی ہے،  کیا یہ واقعی ان کی طرف منسوب ہے؟  اور اگر نہیں تو کیا یہ خطبہ پڑھنا صحیح ہے یا نہیں؟ 

جواب

حضرت  سید عطاء اللہ شاہ بخاری رحمہ اللہ کی طرف منسوب خطبہ درحقیقت ان کا نہیں ہے، بلکہ یہ ایک بد عقیدہ شخص کا خطبہ ہے، جس میں اہلِ سنت و الجماعت کے اجماعی عقیدے کی نفی کی گئی ہے،  اور ہم وزن بے ربط کلمات کی تکرار جابجا موجود ہے، مذکورہ خطبہ پڑھنا اور اس کے مطابق عقیدہ رکھنا شرعاً درست نہیں۔

مذکورہ خطبہ  کے حوالہ سے جامعہ کے دار الافتاء کی جانب سے تفصیلی فتوی حوالہ نمبر : ٩٦٦،  بتاریخ: ٢٤/ ٢/ ١٤٣٢ ہجری بمطابق: ٢٩/ ١/ ٢٠١١ عیسوی کو جاری کیا گیا تھا۔  فقط واللہ  اعلم

 


فتوی نمبر : 144209201582

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں