بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 صفر 1442ھ- 01 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

شعبان کی پندرہویں شب میں اگربتی جلانا


سوال

کیا اگر بتی شعبان کی بڑی رات کو  کرسکتے ہیں؟

 

جواب

شعبان کی کسی بھی رات میں خاص کر اگر بتی جلانا شریعت میں ثابت نہیں ہے،  اگر بتی کا کام خوش بو  دینا ہے، اس کا کسی بھی خاص رات کو جلانے سے نہ کوئی تعلق ہے نہ کسی رات کو جلانے میں کوئی خاص ثواب ملتا ہے، لہذا اس رات ہی خاص کرکے  اگر بتی جلانا جائز نہیں ہے، اس سے احتراز لازم ہے۔

"مَنْ أَحْدَثَ فِيْ أَمْرِنَا هذَا مَا لَیْسَ مِنْهُ فَهُوَ رَدٌّ". (بخاری ومسلم). فقط و الله أعلم


فتوی نمبر : 144108200874

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں