بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 26 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

سحری سے دس منٹ پہلے بیوی سے ہم بستری کرنا


سوال

سحری ختم سے دس منٹ پہلے کسی نے اپنے بیوی سے ہم بستری کی, کیا اس پہ کفارہ ہے?

جواب

رمضان المبارک میں غروبِ آفتاب ہوجانے اور روزہ کھل جانے کے بعد سے صبح صادق تک کھانا پینا اور بیوی سے ہم بستری کرنا جائز ہے، لہذا صبح صادق (سحری کا وقت ختم ہونے ) سے دس منٹ پہلے بیوی سے ہم بستری کرنا جائز ہے، اس سے کوئی کفارہ لازم نہیں ہوتا، اور وقت کم ہونے کی صورت میں اسی حالت میں سحری کرکے یا بغیر سحری کے روزہ کی نیت کرنا بھی درست ہے، البتہ نمازِ  فجر سے پہلے غسل کرکے فرض نماز ادا کرنا ضروری ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144109200451

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے