بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 20 جنوری 2021 ء

دارالافتاء

 

سحری کے بعد جماع کرنا


سوال

اگر میاں بیوی سحری کے بعد روزہ بند ہونے سے پہلے پہلے ہم بستری کرلیں تو اس صورت میں قضا اور کفارہ کا کیا حکم ہے؟

جواب

رمضان شریف میں سحری کھانے کے بعد اگر صبح صادق ہونے میں دیر ہو تو اپنی زوجہ سے جما ع کرنا درست ہے۔ لہٰذا صورتِ مسئولہ میں میاں بیوی صبح صادق سے پہلے پہلے جماع سے فارغ ہوگئے تھے تو ان کے روزے میں کچھ نقصان واقع نہیں ہوا، اور نہ ہی ان پر اس کی کوئی قضا یا کفارہ لازم ہے۔ البتہ غسل کرکے فجر کی نماز وقت میں پڑھنا ضروری ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144112200558

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں