بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

12 ذو القعدة 1445ھ 21 مئی 2024 ء

دارالافتاء

 

سوا لاکھ بار اپنے لیے کلمہ پڑھنا


سوال

اپنے لیے سوا لاکھ کلمہ پڑھ کے رکھنا اس ارادے سے کہ ہماری موت کے بعد کوئی پڑھے یا نہ پڑھے؟ تا کہ یہ کلمہ فائدہ دے ،یہ درست ہے ؟

جواب

جس طرح دیگر نیک اعمال نماز، روزہ وغیرہ مسلمان کو آخرت میں فائدہ دیں گے ،اسی طرح اگر کوئی شخص ذکر و اذکار نیز سوا لاکھ مرتبہ کلمہ پڑھ لیتا ہے تاکہ یہ آخرت میں انسان کو فائدہ دے ، یہ عمل درست ہے ۔البتہ سوا لاکھ بار کلمہ پڑھنے کے بارے میں کوئی خاص فضیلت کسی روایت میں منقول نہیں ہے ۔ 

مزید تفصیل کے لیے مندرجہ ذیل لنک پر موجود فتوی ملاحظہ فرمائیں :

سوا لاکھ بار کلمہ پڑھنا

فقط واللہ اعلم 


فتوی نمبر : 144406101818

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں