بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 محرم 1446ھ 16 جولائی 2024 ء

دارالافتاء

 

سجدے کے بعدجلسہ میں نہ بیٹھنے کاحکم


سوال

میرا سوال یہ ہے کہ ایک سجدہ کرنے کے بعد جو جلسہ کیاجاتا ہے اگر وہ جلسہ نہ کیا جائے بلکہ ابھی کمر سیدھی نہ کی ہو اور دوسرا سجدہ کیا جائے تو کیا یہ دونوں سجدے ادا ہو جائیں گے یا یہ ایک شمار ہوگا براہ کرم جواب عنایت فرمائیں

جواب

واضح رہے کہ رکوع کے بعد قومہ کرنا اورسجدے کے بعدجلسہ میں بیٹھناواجب ہے،نیزواجب کاحکم یہ ہے کہ اگرکو جان بوجھ کراس کو چھوڑدیاگیاتووقت کے اندر نماز لوٹانا واجب ہے ،اگربھول کر چھوڑدیاگیاتونماز کے آخرمیں سجدہ سہولازم ہے۔

صورت مسئولہ میں دو سجدوں کے درمیان بیٹھنا واجب ہے، لہذا اگر کسی شخص نے جلسہ جان بوجھ کرنہ کیاہو تو نماز دوبارہ لوٹائی جائےگی،اگربھول کرایساکیاگیاتونماز کے آخرمیں سجدہ سہوکرنالازم ہوگا،البتہ سجدےدونوں   اپنی جگہ   اداہوجائیں گے۔

البحرالرائق میں ہے:

"المصلي إذا ركع ولم يرفع رأسه من الركوع حتى خر ساجدا ساهيا تجوز صلاته في قول أبي حنيفة ومحمد وعليه السهو ا هـ وفي المحيط لو ترك تعديل الأركان أو القومة التي بين الركوع والسجود ساهيا لزمه سجود السهو ا هـ  فيكون حكم الجلسة بين السجدتين كذلك لأن الكلام فيهما واحد والقول بوجوب الكل هو مختار المحقق ابن الهمام ،وفي المحيط لو ترك تعديل الأركان أو القومة التي بين الركوع والسجود ساهيا لزمه سجود السهو اهـ".

(كتاب الصلاة،باب صفة الصلاة،ج:1،ص:317،ط:دارالكتاب الاسلامي)

مرقاۃ المفاتیح میں ہے:

"ويدل عليه ما ذكره قاضي خان فيما يوجب سهو ‌المصلي ‌إذا ‌ركع، ولم يرفع رأسه من الركوع حتى خر ساجدا ساهيا، تجوز صلاته عند أبي حنيفة ومحمد وعليه السهو".

(کتاب الصلاة،باب الركوع،ج:2،ص:714،ط:دارالفكر)

بدائع الصنائع میں ہے:

"وأما بيان سبب الوجوب فسبب وجوبه ‌ترك ‌الواجب الأصلي في الصلاة، أو تغييره أو تغيير فرض منها عن محله الأصلي ساهيا؛ لأن كل ذلك يوجب نقصانا في الصلاة فيجب جبره بالسجود".

(كتاب الصلاة،فصل:في بيان سبب الوجوب،ج:1،ص:691،ط:مكتبہ رشیدیہ-باکستان-)

فقط والله اعلم


فتوی نمبر : 144508102673

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں