بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

23 رمضان 1442ھ 06 مئی 2021 ء

دارالافتاء

 

سجدۂ سہو کے وجوب کے بعد اس کو ترک کر دینے کا حکم


سوال

امام  صاحب   ظہر   کی نماز  میں دوسری رکعت  پر بیٹھنا بھول گئے  اور  آخر میں سجدۂ  سہو  بھول گئے۔کیا نماز  ہوگئی؟

جواب

صورتِ  مسئولہ  میں مذکورہ امام صاحب پر نماز کے  آخر میں سجدۂ  سہو کرنا لازم تھا، اگر سجدۂ  سہو کرنا بھول گئے تو  وقت کے اندر اس نماز کا  اعادہ کرنا لازم تھا، وقت  گزر جانے کے بعد اس  نماز کا اعادہ  واجب نہیں ہے۔

حاشية الطحطاوي على مراقي الفلاح شرح نور الإيضاح (ص: 440):

"كلّ صلاة أدّيت مع كراهة التحريم تعاد أي وجوباً في الوقت، وأمّا بعده فندب."

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144208200333

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں