بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 22 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

صدقۃ الفطر کس کی طرف سے دینا واجب ہے؟


سوال

فطرانہ کے لیےنصاب کا مالک ہوناضروری ہے لہٰذا اگرایک آدمی کےتمام بچےبالغ ہیں اوروہ سب فی الحال اس کی کفالت میں ہیں اورخودنصاب کےمالک نہیں ہیں توکیا ان بالغ بچوں کی طرف سے بھی والدکوفطرانہ ادا کرناہوگا ؟

جواب

فطرانہ/صدقۃ الفطر ہرشخص پرجوکہ صاحب نصاب ہوخوداپنی طرف سے اوراپنی نابالغ اولاد کی طرف سےادا کرنا واجب ہے، بالغ اولاد اگرصاحب نصاب ہوتواپنا فطرانہ خود انہی پرواجب ہے والدپرنہیں، اوراگرصاحب نصاب نہ ہوتونہ ان پرصدقۃ الفطرواجب ہےاورنہ والدپران کی طرف سےواجب ہے،البتہ اگروالدازخود بالغ بچوں کی طرف سےدیدےتویہ بھی صحیح ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143101200380

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے