بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

14 ذو القعدة 1445ھ 23 مئی 2024 ء

دارالافتاء

 

روزے کی حالت میں جوؤں کا مارنا


سوال

روزے کی حالت میں جوؤں کا مارنا کیسا ہے؟

جواب

روزے کی حالت میں جوؤں کو  مارنے سے روزے پر کوئی اثر نہیں پڑتا،اور نہ ہی روزہ ٹوٹتا ہے ۔

فتاوی شامی میں ہے :

"والحاصل أن الصوم يبطل بالدخول، والوضوء بالخروج." 

(کتاب الطھارۃ،باب سنن الوضؤ ، 1 / 149  ،ط :دار  الفکر ،بیروت)

السنن الكبرى للبيهقي : 

"عن ابن عباس، أنه ذكر عنده الوضوء من الطعام، قال الأعمش مرة: والحجامة للصائم، فقال: " إنما الوضوء مما خرج، وليس مما دخل، ‌وإنما ‌الفطر ‌مما ‌دخل، وليس مما خرج."

( كتاب الطهارة، باب الوضوء من الدم يخرج من أحد السبيلين و غير ذلك من دود أو حصاة أو غيرهما، 1/ 187 ط: دار الكتب العلمية بيروت)  

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144509100709

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں