بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

4 ربیع الاول 1444ھ 01 اکتوبر 2022 ء

دارالافتاء

 

روزے کی حالت میں آنکھ میں دوا ڈالنا


سوال

 آنکھوں میں قطرے ڈالنے سے کیا روزہ ٹوٹ جاتا ہے؟ اور روزے کی حالت میں آنکھ کا آپریشن کروا سکتے ہیں بذریعہ لیزریا نہیں؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں   روزہ کی حالت میں آنکھ میں دوا ڈالنا جائز ہے، اس سے روزہ نہیں ٹوٹتا، اگرچہ دوا کا ذائقہ حلق میں محسوس ہو،اسی طرح آنکھ کاآپریشن بذریعہ لیزرکرنے سے بھی روزہ نہیں ٹوٹتاہے۔

فتاویٰ عالمگیری میں ہے:

'' ولو اَقطر شیئاً من الدواء في عینه لا یفطر صومه عندنا وإن وجد طعمه في حلقه."

(کتاب الصوم،  الباب الرابع فیما یفسد وما لایفسد،ج:1،ص:203،ط: رشیدیۃ)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144309100410

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں