بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

23 ربیع الثانی 1443ھ 29 نومبر 2021 ء

دارالافتاء

 

روزہ کی حالت میں منہ بھر کر قے (الٹی) ہوجانا


سوال

 روزے کی حالت میں خود بخود منہ بھر کر الٹی آگئی اور اسے نگلا نہیں، بلکہ باہر کر دی الٹی، کیا روزہ ٹوٹ گیا یا نہیں؟

جواب

روزہ  کی حالت میں اگر  منہ بھر کر الٹی ہو اور  اس کو قصدًا دوبارہ حلق میں نہیں اتار ا ہو تو اس سے روزہ فاسد نہیں ہوتا، لہذا مذکورہ صورت میں روزہ فاسد نہیں ہوا۔

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (2/ 414):

"(وإن ذرعه القيء وخرج) ولم يعد (لايفطر مطلقًا) ملأ أو لا."

فقط والله أعلم


فتوی نمبر : 144209201779

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں