بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

23 ربیع الثانی 1443ھ 29 نومبر 2021 ء

دارالافتاء

 

روزے کی نیت کیا ہوتی ہے؟


سوال

عام دن کے روزے کی نیت کیا ہوتی ہے جیسے رمضان؟

جواب

واضح رہے کہ نیت دل کے ارادے کا نام ہے، تاہم دل کی نیت کے ساتھ ساتھ زبان سے نیت کے الفاظ ادا کر لینا بہتر ہے۔ نیت کے الفاظ میں کوئی بھی الفاظ استعمال کر سکتا ہے، جس سے یہ معلوم ہوجائے کہ یہ آدمی فلاں کام کرنا چاہ رہا ہے۔ مثلًا رمضان کے روزے کی نیت کے لیے یہ الفاظ کہہ دے کہ "میں رمضان کے روزے کی نیت کرتا ہوں"۔ اور اگر کوئی نفل روزہ رکھ رہا ہے تو نیت کے لیے یہ الفاظ کہہ دے کہ میں نفلی روزے کی نیت کرتا ہوں۔

عام دن کے روزے سے مراد اگر نفل روزہ ہے تو اس میں صرف روزے کی نیت کافی ہے، بہرحال  اس طرح کے کوئی بھی الفاظ استعمال کرنا چاہے کر سکتا ہے۔ نیت درست ہوجائے گی۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144201200507

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں