بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

15 محرم 1446ھ 22 جولائی 2024 ء

دارالافتاء

 

روزه کی حالت میں کلی کرتے وقت حلق میں پانی جانے کاشک ہوجائے


سوال

روزے کی حالت میں کلی کرتے وقت اگر منہ میں پانی جانے کاشک ہوتو کیاکرے؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں روزہ دار کوواقعۃً اگر کلی کرتے وقت حلق میں پانی جانے کاشک ہےتو محض شک سے روزہ نہیں ٹوٹے گا۔

الأشباہ والنظائر میں ہے :

"اليقين لا يزول بالشك،‌‌الأصل بقاء ما كان على ما كان،أكل آخر الليل وشك في طلوع الفجر صح صومه؛ لأن الأصل بقاء الليل، وكذا في الوقوف، والأفضل أن لا يأكل مع الشك وعن أبي حنيفة رحمه الله أنه أمسى بالأكل مع الشك إذا كان ببصره علة، أو كانت الليلة مقمرة، أو متغيمة، أو كان في مكان لا يستبين فيه الفجر، وإن غلب على ظنه طلوعه لا يأكل، فإن أكل فإن لم يستبن له شيء،لاقضاءعليه في ظاهر الرواية."

(‌‌الفن الأول: القواعد الكلية، القاعدة الثالثة، ص:49، ط:سعيد)

فقط والله أعلم


فتوی نمبر : 144509100293

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں