بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

4 شوال 1441ھ- 27 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

روزے کے دوران حیض آنے کی صورت میں دن کے بقیہ وقت میں حائضہ کے لیے کھانے پینے کا حکم


سوال

روزے  کی حالت میں اگر ظہر کےبعد حیض آجائے تو عورت کے لیے اس کے بعد کھانا پینا جائز ہے؟

جواب

عورت کو اگر روزے کی حالت میں حیض آجائے تو اس کا روزہ ٹوٹ جائے گا اور اس روزے کی قضا لازم ہوگی۔

دن میں جس وقت بھی حیض آجائے اس وقت سے لے کر مغرب تک اس عورت پر کھانے پینے کی کوئی پابندی نہیں؛ کیوں کہ حائضہ عورت کے لیے رمضان میں دن کے اوقات میں کھانا پینا مطلقاً جائز ہے، بعض فقہاء نے لکھا ہے کہ روزے کے دوران حیض آجائے تو عورت کو ضرور کچھ کھا، پی لینا چاہیے، کیوں کہ اس حالت میں عورت کے لیے روزہ رکھنا جائز نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144109202870

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے