بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 شوال 1445ھ 22 اپریل 2024 ء

دارالافتاء

 

روزہ میں غسل کرتے وقت یا سر دھوتے وقت پانی غلطی سے حلق میں چلے جانا


سوال

اگر غسل کرتے وقت یا سر دھوتے وقت حلق میں پانی چلا جائے تو کیا روزہ ٹوٹ جاتا ہے؟ 

جواب

اگر غسل کرتے وقت یا سر دھوتے وقت پانی غلطی سے حلق  سے نیچے اتر  جائے  اور  روزہ یاد ہو تو  روزہ فاسد ہو جائے گا، قضا لازم ہوگی ، کفارہ لازم نہیں ہوگا۔

الفتاوى الهندية (1/ 202):

'' وإن تمضمض أو استنشق فدخل الماء جوفه إن كان ذاكراً لصومه فسد صومه، وعليه القضاء، وإن لم يكن ذاكراً لايفسد صومه، كذا في الخلاصة، وعليه الاعتماد''.

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144209200532

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں