بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

5 ربیع الاول 1444ھ 02 اکتوبر 2022 ء

دارالافتاء

 

قرآنِ مجید پڑھنے پر اجرت


سوال

 میں طالب علم ہوں، میرا ایک ساتھی ہے وہ بھی طالب علم ہے، ایک صاحب نے میرے ساتھی سے اپنے والد کے ایصالِ ثواب کے لیے قرآنِ مجید پڑھوایا تھا، ان صاحب نے اس کو قرآن پڑھنے کے پیسے دیے، اس نے منع  بھی کیا کہ جائز نہیں ہے،  ان صاحب نے زبر دستی دے  دیے، اور کہا کہ میں اپنی خوشی سے دے رہا ہوں،  اب ان پیسوں کا وہ کیا کرے؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں اس موقع پر رقم لینا جائز نہ ہوگا، لہذا مذکورہ طالب علم کو چاہیے کہ وہ رقم واپس کردے، اگر وہ واپس نہ لیں تو کسی بھی عنوان سے رقم ان کو دے دی جائے۔ بعد  میں کبھی  اگر مذکورہ شخص بطورِ تحفہ رقم دے تو پھر لینا درست ہوگا۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144108200305

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں