بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 ذو القعدة 1445ھ 26 مئی 2024 ء

دارالافتاء

 

قربانی کے جانور کے پیشاب میں خون آرہا تو اس کی قربانی کا کیا حکم ہے؟


سوال

اگر قربانی کے جانور کے پیشاب میں خون آرہا تو اس کی قربانی کا کیا حکم ہے؟

جواب

جس حلال جانور کے پیشاب میں خون آرہا ہو اس کی قربانی جائز ہے۔

العناية شرح الهداية  ميں  ہے:

"والأصل فيه ‌أن ‌العيب ‌الفاحش مانع واليسير غير مانع، لأن الحيوان قلما ينجو عن يسير العيب، واليسير ما لا أثر له في لحمها".

(كتاب الأضحية،ج:9 ،ص:514 ،ط:دار الفكر ،لبنان)

فقط والله اعلم


فتوی نمبر : 144411100442

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں