بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

5 ذو الحجة 1445ھ 12 جون 2024 ء

دارالافتاء

 

قضا نماز کس ٹائم پڑھنی چاہیے؟


سوال

قضا نماز کس ٹائم پڑ ھنی چاہیے؟

جواب

قضا نمازکے لیے کوئی وقت مقرر نہیں،  جس وقت چاہیں قضا نماز پڑھ سکتے ہیں،  سوائے تین مکروہ اوقات کے،  یعنی:  سورج نکلتے وقت ، زوال کے وقت اور غروبِ شمس کے وقت نہیں پڑھ سکتے۔  

الدر المختار مع رد المحتار میں ہے:

"وجميع أوقات العمر وقت القضاء إلا الثلاثة المنهية كما مر ".

(وفي رد المحتار:) " قوله: (إلا الثلاثة المنهية) وهي: الطلوع، والاستواء، والغروب ".

(الدر المختار مع رد المحتار: كتاب الصلاة، باب قضاء الفوائت 2/ 66، ط: سعيد)

فقط والله اعلم


فتوی نمبر : 144404101169

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں