بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

19 ربیع الاول 1443ھ 26 اکتوبر 2021 ء

دارالافتاء

 

قادیانی کی اشیاء کی خریداری کا حکم


سوال

قادیانی کی اشیاء  کے استعمال کا کیا حکم ہے ؟

جواب

قادیانی دائرہ اسلام سے خارج ہیں، جب کہ خود کو مسلمان اور مسلمانوں کو کافر گردانتے ہیں،  اور  اپنی  کمائی  میں سے معتد بہ حصہ مسلمانوں کو گم راہ کرنے اور  سادہ لوح مسلمانوں کے ایمان پر ڈاکا  ڈالنے میں صرف کرتے ہیں، جس کی وجہ سے ان کی کسی بھی قسم کی معاونت شرعاً و اخلاقاً جائز نہیں،  قادیانی اپنے آپ کو مسلمان کہلواکر عام لوگوں کو یہ تاثر دیتے ہیں کہ وہ امتِ مسلمہ کا حصہ ہیں، جس کی وجہ سے کئی مفاسد پیداہوتے ہیں؛ اس لیے ان سے مکمل بائیکاٹ کرنا دینی فریضہ ہے، لہذا صورتِ  مسئولہ میں قادیانیوں کی  اشیاء کی خریداری  اور ان کا استعمال جائز  نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144211201288

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں