بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

15 محرم 1444ھ 14 اگست 2022 ء

دارالافتاء

 

پچاس لاکھ کی تقسیم


سوال

 گھر عورت کے نام تھا عورت کا انتقال ہو گیااب شوہر ،ایک بیٹے اور دو بیٹیوں میں گھر کی مالیت پچاس لاکھ روپے کی تقسیم کیسے ہو گی؟

 

جواب

صورتِ مسئولہ میں مرحومہ کے ترکہ کی تقسیم یہ ہے  کہ سب سے  پہلے  تجہیزو تکفین کا خرچہ نکالنے کے بعداگر مرحومہ کے ذمہ قرض ہو تو اس  کو ادا کر نے کے بعد ،اگرمرحومہ  نے کوئی جائز وصیت کی ہو تو اس کو ایک تہائی میں سے نافذ کیا جائے گا، اس کے بعد کل جائیداد منقولہ و غیر منقولہ کوسولہ حصوں میں تقسیم کیا جائے گا، اس میں سے چار حصے شوہر کو ، چھ حصے بیٹے کو ،  ہر ایک بیٹی کو تین ،تین حصے ملیں گے۔ 

صورت تقسیم یہ ہے :

میت  16/4

شوہربیٹابیٹیبیٹی
4633

یعنی پچاس لاکھ روپے میں شوہر کو 1250000روپے ،بیٹےکو 1875000روپے،اور ہر ایک بیٹی کو  937500روپے ملیں گے۔

فقط واللہ اعلم 


فتوی نمبر : 144310101039

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں