بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

16 شوال 1445ھ 25 اپریل 2024 ء

دارالافتاء

 

حیات النبی ﷺ سے متعلق فاسد عقیدہ رکھنے والے کی اقتدا کا حکم


سوال

کیا پنج پیری  کے پیچھے نماز پڑھنا جائز ہے؟ کیوں کہ ان کے ساتھ یہ اختلاف ہےکہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم زندہ ہیں اپنی قبر میں اور باقی انبیاء کرام بھی !

جواب

اہل السنہ و الجماعہ  کا اجماعی عقیدہ  ہے کہ انبیاءِ کرام علیہم السلام اپنی قبورِ مبارکہ میں حیات ہیں، اور ان کے اجسام محفوظ ہیں، یہ حیات دنیوی حیات کے مماثل بلکہ اس سے اقویٰ ہے، جو شخص اس عقیدے کا منکر  ہو وہ اہل السنہ و الجماعہ سے خارج ہے،   ایسے شخص کے پیچھے نماز مکروہِ تحریمی ہے، اگر جمہور اہلِ سنت والجماعت کے عقیدے کا حامل امام میسر ہو تو ایسے شخص کی امامت میں نماز ادا نہ کی جائے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144108201388

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں