بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 صفر 1443ھ 17 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

پندرہ شعبان کی رات سرمہ لگانے کی روایت کی تحقیق


سوال

کیاپندرہ شعبان کی  رات ،سونے سے پہلے آنکھوں میں سرمہ لگانےکا ثبوت احادیث میں ہے؟

جواب

مختلف احادیثِ مبارکہ میں بلاتخصیص رات کو سونے پہلے  رسول اللہ ﷺ  کا سرمہ لگانے کا عمل ثابت ہے جس  کی آپ ﷺ نے ترغیب بھی دی ہے، تاہم  بالخصوص پندرہ  شعبان کی رات کا عمل کسی معتبر اور مستند کتاب میں نہیں ملا۔

سنن الترمذي  میں ہے:

"عن ابن عباس قال: قال رسول الله صلى الله عليه وسلم: «إن خير ما تداويتم به اللدود والسعوط والحجامة والمشي،وخير ما اكتحلتم به الإثمد، فإنه يجلو البصر وينبت الشعر»«وكان لرسول الله صلى الله عليه وسلم مكحلة يكتحل بها عند النوم ثلاثًا في كل عين»: هذا حديث حسن غريب."

 (باب ماجاء فى السعوط وغيره، رقم الحديث:2048، ج:4، ص:388، ط:مطبعة مصطفى) 

فقط والله اعلم 


فتوی نمبر : 144208200670

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں