بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

19 ربیع الثانی 1442ھ- 05 دسمبر 2020 ء

دارالافتاء

 

پگڑی پر دکان یا مکان کا خریدنا


سوال

پگڑی پر دکان، مکان خریدنے کی شرعی حیثیت کیا ہے؟

جواب

واضح رہے کہ مروجہ پگڑی کا  معاملہ شرعاً درست نہیں ہے؛ کیوں کہ  پگڑی  نہ تو مکمل   خرید و فروخت کا معاملہ ہے، اور نہ ہی مکمل اجارہ (کرایہ داری) کا معاملہ ہے، بلکہ یہ دونوں کے درمیان ایک  ملا جلا معاملہ ہے، جس کی وجہ سے پگڑی پر لیے گئے مکان یا  دوکان پر بدستور مالک کی ملکیت برقرار رہتی ہے، لہذا صورتِ مسئولہ میں پگڑی کا معاملہ کرنا شرعاً درست نہیں ہے، اس کا متبادل کرایہ داری  کا معاملہ ہے۔ جس میں شرعاً کوئی قباحت نہیں۔

مزید تفصیل کے لیے درج ذیل لنک پر فتویٰ ملاحظہ کیجیے:

کرایہ پر دکان لے کر آگے پگڑی یا کرایہ پر دینا 

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144202200019

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں