بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

2 ربیع الاول 1442ھ- 20 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

نماز کے ارکان


سوال

نماز کے اَرکان کیا ہیں؟

جواب

نماز میں چھ چیزیں فرائض اور ارکان  ہیں:

(1) تکبیر تحریمہ۔

(2) قیام یعنی کھڑا ہونا، اگر آدمی کھڑے ہونے پر قادر ہو تو بغیر کھڑے ہوئے نماز صحیح نہیں ہوتی، فرض اور واجب نمازوں میں قیام فرض ہے۔

(3) قراءۃ (تلاوت کرنا)۔

(4) رکوع۔

(5) سجود، یعنی سجدہ کرنا، ہر رکعت میں دومرتبہ فرض ہے۔

(6) قعدہ اخیرہ مقدار ِ تشہد، یعنی تشہد پڑھنے کے بقدر قعدۂ اخیرہ میں بیٹھنا۔

حضرات حنفیہ کے نزدیک نماز سے نکلنے کے لیے   لفظ ’’سلام‘‘ واجب ہے۔

فتاویٰ شامی میں ہے:

"(من فرائضها) ... (التحریمة) ... (ومنها القیام) ... (ومنها القراءۃ) ... (ومنها الرکوع) ... (ومنها السجود) ... (ومنها القعود الأخیر) ... (قدر) ... التشہد) ".

(رد المحتار علی الدر المختار، کتاب الصلاۃ، باب صفۃ الصلاۃ، (ج: 1 ص: 442 - 448) ط: سعید کراچی)

العنایہ شرح الہدایہ میں ہے:

"ثم إصابة لفظ السلام واجبة عندنا، وليست بفرض". (2/22)

فقط والله أعلم


فتوی نمبر : 144112201304

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں