بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 ذو الحجة 1441ھ- 08 اگست 2020 ء

دارالافتاء

 

نابالغ بچے کا تراویح میں امام بننا


سوال

 نابالغ بچے کی اقتدا  میں نماز تراویح پڑھنے کا کیا حکم ہے؟

جواب

بالغ کے لیے نابالغ کی اقتدامیں تراویح کی نماز پڑھنا جائز نہیں ہے، اگر مقتدی بھی نابالغ بچے ہوں تو  ان کے لیے نابالغ کی امامت درست ہے۔

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (1 / 583):
"(قوله: بأي وجه كان) أي سواء كان لفقد أهلية الإمام للإمامة كالمرأة والصبي". فقط و الله أعلم


فتوی نمبر : 144109200540

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں